پولیس کا گرینڈ آپریشن، سینکڑوں جرائم پیشہ افراد گرفتار

کرک (نمائندہ خصوصی)کر ک پولیس نے جرائم پیشہ عناصر اور منشیات فروشوں کے خلاف جاری گرینڈ سرچ اینڈ سٹرائیک آپریشن کلین سویپ کے دوران گزشتہ چند دنوں کے دوران مختلف تھانہ جات کوقتل ،اقدام قتل اور دیگر سنگین جرائم میں مطلوب مجرمان اشتہاریوں سمیت، منشیات فروشوں اور سینکڑوں ملزمان گرفتار کرکے ان کے قبضہ سے بھاری مقدار میں غیر قانونی مختلف بور کا اسلحہ وایمونیشن اور منشیات کی بھاری مقدار برآمد کی گئی ۔تفصیلات کے مطابق ڈسٹرکٹ پولیس آفیسر کرک افتخار الدین نے ضلع کرک کے تمام ایس ایچ اوز کو قانون کی بالادستی کو قائم رکھتے ہوئے جرائم پیشہ ، قانون شکن عناصر اور دیگر سماجی برائیوں میں ملوث افراد کے خلاف بڑے پیمانے پر کریک ڈاﺅن کرنے اور ان کے خلاف سخت ایکشن لینے کے احکامات کی روشنی میں سرکل ایس ڈی پی اوز اور تھانہ ایس ایچ اوزنے ریسکیو15،ریپڈ رسپانس فورس ، ایلیٹ کمانڈوز اور لیڈی پولیس اہلکاروںنے حصہ لیتے ہوئے جرائم کی بیخ کنی کیلئے مختلف اور ضلع کرک کے دور دراز مقامات پر97 سرچ اینڈ سٹرائیک آپریشنز اور درجنوں ٹارگٹڈ گھروں اور مجرمان کے کمین گاہوں پر چھاپے لگائے گئے۔آپریشن کلین سویپ کے نتیجے میں کرک پولیس نے 118مجرمان اشتہاریوں سمیت سینکڑوں ملزمان گرفتار کر لئے۔ گرفتا راشتہاریوں میں 14قتل کے مقدمات میں مطلوب اشتہاری ، 21اقدام قتل کے اشتہاری ،83دیگر سنگین مقدمات میں مطلوب اشتہاری،22منشیات فروش ،15 جواری، ہوائی فائرنگ کے مرتکب 15ملزمان، 30آوارہ گرد،268مشتبہ گان،مشکوک افراد اور نیشنل ایکشن پلان کے تحت غیر رجسٹرڈ کرایہ داران اور مکان مالکان شامل ہیں۔پولیس نے سرچ آپریشن کے دوران اورغیر قانونی اسلحہ رکھنے کی پاداش میں گرفتار ملزمان کے قبضہ سے 13کلاشنکوف، 2کلاکوف،4 رائفل ، 7 بندوقیں اور ریپیٹر ،29پستول 30بور اور 9MM،ایک ہینڈ گرینڈ،869مختلف بور کے کارتوس اور مختلف علاقوں سے چوری شدہ 3گاڑیاں برآمد کئے گئے۔ جبکہ گرفتار منشیات فروشوں کے قبضہ سے 27.370کلوگرام چرس برآمد کرکے ملزمان کو جیل کے سلاخوں کے پیچھے دکھیل دیا۔علاوہ ازیں پولیس نے حفظ ماتقدم کی خاطر 266افراد کو پابند ضمانت کرکے امن عامہ میں خلل کے خدشات پیدا کرنے پرکنٹرول کیا گیا۔امن وامان کے صورتحال کو برقرار رکھنے اور جرائم کے روک تھام کیلئے ڈی پی او کرک افتخار الدین نے کمیونٹی پولیسنگ کو فروغ دینے کے حوالے سے وقتاً فوقتاًپولیس افسران کے علاوہ مختلف علاقوں سے تعلق رکھنے والے مشران عمائدین علماءاور میڈیا نمائندوں کے ساتھ میٹنگز منعقد کئے گئیں۔جس کی وجہ سے پولیس ، میڈیا اور عوام کے باہمی تعاون کی بدولت ضلع کرک میں گزشتہ ماہ کسی قسم دہشت گردی سمیت اغوائیگی ،ڈکیتی ،سرقہ باالجبر،بھتہ خوری ، چوری عام اور زنا باالجبر کا کوئی واقعہ رونما نہیں ہوا ہے۔ جبکہ ڈی پی او کرک افتخار الدین نے عوامی مسائل سننے کیلئے اور عوام کو انصاف مہیا کرنے اور پولیس کی بروقت امداد کی فراہمی کے حوالے سے کھلی کچہریاں منعقد کی گئیں۔اور ڈی پی او کرک نے انسپکٹر جنرل آف پولیس خیبر پختوناہ کی جانب سے عوام کی سہولت کیلئے قائم مراکز پاس اور پال کے اوقا ت کار کو بڑھا یا تاکہ عوام کو 24گھنٹے کسی شکایت کی صور ت میںمشکل کا سامنا نہ ہو۔اور عوام کو زیادہ ریلیف فراہم ہو۔ پاس ( پولیس ایکسس سروس ) کے ذریعے عوام کے مختلف نوعیت کے شکایات درج ہونے کی صورت میں اب تک ہزاروں شکایات پرفوری عمل درآمد ہوکران کو حل کرکے عوام دوست پولیس کو عملی جامہ پہنایا گیا ہے۔ڈی پی او کرک نے تھانہ جات کے تمام ایس ایچ اوز اور محرران کو سختی سے احکامات جاری کرتے ہوئے کہا کہ تھانہ جات میں فریاد لے کر آنے والے تمام افراد کے ساتھ بلا تفریق اپنا رویہ دوستانہ مہذب اور شگفتہ رکھنے اور سائلین کو فوری اور بروقت امدادفراہم کریں۔

اپنا تبصرہ بھیجیں