انٹرویو میں کاجول نے بالی وڈ میں ہراسانی کی تصدیق کی

ممبئی(شوبز ڈیسک) کاجول نے تنوشری دتہ کے حق میں آواز اٹھاتے ہوئے کہا ہے کہ ہراسانی فلم انڈسٹری کی حقیقت ہے۔ایک بھارتی ویب سائٹ کو دیئے گئے انٹرویو میں کاجول نے بالی ووڈ میں ہراسانی کی تصدیق کرتے ہوئے کہا ہے کہ تنوشری دتہ نے جو کہا وہ واقعی حقیقت ہے لیکن ہراسانی جیسا قبیح فعل صرف فلم انڈسٹری تک محدود نہیں ہے بلکہ ہر جگہ ہے۔ صرف خواتین کو نہیں بلکہ مردوں کو بھی ہراسانی کا نشانہ بنایا جاتا ہے۔اداکارہ کاجول نے کہا بالی ووڈ میں میرا کیریئر کافی طویل ہے۔ لیکن مجھے کبھی ہراسانی کا سامنا نہیں کرنا پڑا تاہم اگر کبھی ایسا ہوتا تو میں اسکے خلاف ضرور آواز اٹھاتی۔کاجول نے ’’می ٹومہم‘‘ کے بارے میں کہا کہ اس مہم کا مطلب ہے کہ آپ اپنے ساتھ ہونے والی ناانصافی کے خلاف کھڑے ہورہے ہیں جسے دیکھ کر دوسرے لوگوں میں بھی ہمت آتی ہے اور وہ بھی اپنی آواز بلند کرتے ہیں۔واضح رہے کہ اداکارہ تنوشری دتہ نے نانا پاٹیکر پر ہراسانی کا الزام عائد کرتے ہوئے کہا ہے کہ 10 برس قبل ایک فلم کی شوٹنگ کے دوران اداکار نانا پاٹیکر نے انہیں ہراساں کیا تھا۔

اپنا تبصرہ بھیجیں