سابق وزیراعظم نواز شریف نے اپنا بیان قلمبند کرا دیا،میں اپنا دفاع پیش نہیں کر رہا

اسلام آباد(نیوز ڈیسک)سابق وزیراعظم نواز شریف نے نیب کی جانب سے دائر العزیزیہ ریفرنس میں بیان قلمبند کراتے ہوئے کہا ہے کہ استغاثہ میرے خلاف کیس ثابت کرنے میں ناکام رہا، میں العزیزیہ اسٹیل مل ریفرنس میں اپنا دفاع پیش نہیں کررہا۔ نوازشریف نے کہا کہ ہے کہ بارثبوت استغاثہ پر ہے اور اسی نے الزام کو سچ ثابت کرنا ہے۔ نوازشریف نے العزیزیہ ریفرنس میں اپنا بیان مکمل کرلیا ہے اورعدالت نے فریقین سے حتمی دلائل طلب کرلیئے ہیں۔احتساب عدالت کی جانب سے نوازشریف کو 151 سوال دیے گئے تھے جبکہ سابق وزیراعظم نے چار سوالوں کے جواب کیلئے اضافی وقت مانگا تھا۔ سابق وزیراعظم العزیزیہ ریفرنس میں 342 کے تحت اپنا بیان ریکارڈ کرا رہے ہیں۔ احتساب عدالت کی جانب سے فلیگ شپ ریفرنس میں 18 اور العزیزیہ میں 22 گواہان کے بیان قلم بند کیئے گئے ہیں۔ قبل ازیں سپریم کورٹ نے بارہ اکتوبر کو چھٹی بار مہلت میں توسیع دی تھی جو 17 نومبر کو ختم ہوگئی تھی تاہم بعد ازاں سپریم کورٹ نے نوازشریف کے خلاف نیب ریفرنسز کی سماعت مکمل کرنے کیلئے احتساب عدالت کو مزید تین ہفتوں کی مہلت دی ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں