خرافات.. نجیب محفوظ، مترجم: خاقان ساجد

title najeeb

یہ نماز عصر کے بعد درس کا وقت تھا اور آج بھی حسب معمول ایک سامع ہی درس سننے کے لیے موجود تھا۔ جب سے چالیس سالہ شیخ عبدالربہ نے اس جامع مسجد کے امام کا منصب سنبھالا تھا، صرف چچا حسنین ہی اس کا درس سننے کے لیے آتا تھا۔ چچا حسنین مسجد سے مزید پڑھیں

آگ اور محبت—اینی واھل (ترجمہ وسیم بن اشرف)

aag aur Muhabbat title 1

آگ اور محبت تحریر:۔ اینی واھل ترجمہ:۔ وسیم بن اشرف، ڈپٹی نیوز ایڈیٹر۔ دنیا میڈیا گروپ۔ ملتان میری آنکھ یکلخت کھلی، کمرے میں گھپ اندھیرا تھا، اس خوف سے کہ شاید مقررہ وقت پر نہیں جاگی ہوں میں گھبرا گئی۔ فوراً ہاتھ بڑھا کر الارم کلاک اٹھا کر دیکھا معلوم ہوا ابھی تین نہیں بجے، مزید پڑھیں

گُھس بیٹھیا—–وسیم بن اشرف

ghus bethia title

ڈان اینڈوکرز پلاسٹک کمپنی کے دفتر میں تاریکی اور خاموشی چھائی ہوئی تھی۔ راہداری میں مدھم روشنی کا بلب جل رہا تھا۔ ایک دروازے پر کمپنی کے پارٹنر ڈان ماریسن کے نام کی تختی نظر آ رہی تھی۔ اس وقت رات کے دس بجے تھے۔ لؤکول ادھر ادھر دیکھتا ہوا راہداری میں داخل ہوا۔ اس مزید پڑھیں

آ بیل مجھے مار—وسیم بن اشرف

A bel muje maar title

رات کے سناٹے میں ایک تیز چیخ اچانک خاموشی کی تمام دیواریں توڑ گئی۔ جیمز اپنے لان میں بیٹھا ٹیبل لیمپ کی روشنی میں اپنی تازہ کتاب کے مسودے کی پروف ریڈنگ کر رہا تھا۔ چیخ کی آواز سنتے ہی وہ اچھل کر کھڑا ہو گیا۔ چیخ دوبارہ سنائی دی۔ یہ صاف طور پر ایک مزید پڑھیں

چیک نمبر 302—وسیم بن اشرف

cheque no 302 title 1

یہ حیرت انگیز واقعہ مارچ 1951ء میں شکاگو کے ایک متمول تاجر کے ساتھ پیش آیا تھا۔ بظاہر یہ واقعہ صرف تین دن پر پھیلا ہوا ہے لیکن ہر لمحے کی بدلتی ہوئی صورتحال نے اسے اتنا حیرت انگیز اور پراسرار بنا دیا ہے کہ قاری بڑی بیتابی سے اگلے لمحے کا ڈرامہ دیکھنے کے مزید پڑھیں

قصہ ایک رات کا–ڈینیل ووڈ رِل

Daniel woodrl

پیل ہام ایک رات پہنچا تو اپنے پلنگ کے برابر ایک ننگ دھڑنگ آدمی کوغراتے پایا۔ کمرے میں روشنی کم تھی لیکن اس کی آنکھوں نے پھر بھی کاندھے سے کلائی تک اس آدمی کا ایک بازو، کسی جلتی شے کا گوندا ہوا نشان، ذرا سے باہر کو ابھرے دانتوں کی سرسری جھلک اور تنے مزید پڑھیں

شکاری—انتون چیخوف

Antone Chekhov title

مرطوب، حبس آلود دوپہر۔ آسمان پر بادل کی کترن تک نہیں۔ ۔ ۔ دھوپ میں پکی ہوئی گھاس تھکی ماندی، مایوس دکھائی دے رہی ہے، جیسے اگر بارش ہو بھی جائے تب بھی یہ کبھی سرسبز نہیں ہو سکے گی۔ جنگل خاموش، ساکت کھڑا ہے، جیسے درختوں کے اوپر سے کسی کی راہ تک رہا مزید پڑھیں

نیا وکیل–فزانز کافکا (ترجمہ نیر مسعود)

Webp.net-compress-image (23)

ہمارے یہاں ایک نیا وکیل آیا ہے،ڈاکٹر بُسفیلس- اس کے حلیے میں ایسی کوئی بات نہیں ہے جس سے آپ کو یہ خیال آ سکے کہ وہ کسی زمانے میں سکندر مقدونی کا گھوڑا تھا- ہاں، اگر آپ اس کی کہانی سے واقف ہوں تو البتہ آپ کو کچھ کچھ ایسا محسوس ہو سکتا ہے. مزید پڑھیں

پاس سے گزرنے والے—-فرانز کافکا (ترجمہ نیر مسعود)

pass se guzurne wale 2

جب آپ رات کو کسی سڑک پر ٹہلنے کے لیے نکلتے ہیں اور خاصے فاصلے پر سے دکھائی دیتا ہوا. اس لیے کہ سڑک پہاڑی کو جارہی ہے اور پورا چاند نکلا ہوا ہے. ایک آدمی دوڑتا ہوا آپ کی سمت آتا ہے تو آپ اسے پکڑ نہیں لیتے. اگر وہ کوئی ناتواں شکستہ حال مزید پڑھیں

گیلری میں—-فرانزکافکا(ترجمہ نیر مسعود)

اگر سرکس میں مریل مقوق سی کرتب دکھانے والی کو کوئی کوڑا گھماتا ہوا بے درد رنگ ماسٹر کسی بدلگام گھوڑے کی پیٹھ پر بٹھا کر مجبور کرتا کہ وہ کبھی سیر نہ ہونے والے تماشائیوں کے سامنے مہینوں تک رکے بغیر چکر پر چکر لگائے جائے،گھوڑے پر زناٹے کے ساتھ گھومتی رہے، بوسے اچھالتی مزید پڑھیں